بسم اللہ الرحمن الرحیم

قومی

پینڈورا پیپرز میں نام، لیفٹننٹ جنرل ریٹائرڈ شفاعت اللہ شاہ کی وضاحت آگئی

لیفٹننٹ جنرل ریٹائرڈ شفاعت اللہ شاہ نے کہا ہے کہ پنڈورا لیکس میں ان کے جس فلیٹ کا ذکر آیا ہے وہ انھوں نے لاہور میں ایک پلاٹ بیچ کر خریدا تھا۔ 

سوشل میڈیا پر ایک بیان میں شفاعت اللہ شاہ نے کہا کہ برطانوی قانون کے مطابق آف شور کمپنی کے ذریعے برطانیہ میں جائیداد کی خریداری قانونی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ انھوں نے اپنی جائیداد کا آرمی حکام کو بتا رکھا تھا اور اسے اپنے ٹیکس ریٹرن میں بھی ظاہر کیا تھا، اس فلیٹ کی جتنی قیمت بتائی جا رہی ہے اس سے نصف تھی، اس فلیٹ کا اکبر آصف سے کوئی تعلق نہیں۔

انھوں نے کہا کہ ان تحقیقات میں ایک غیرملکی صحافی بھی شریک تھیں جو حال ہی میں دو برس بھارت میں مقیم رہیں اور پاکستانی فوج کے افسران کو بدنام کرنا ’را‘ کا معمول رہا ہے۔

آئی سی آئی جے کے مطابق جنرل ریٹائرڈ شفاعت اللہ شاہ کی بیوی نے 2007 میں ایک آف شور کمپنی کے ذریعے 12 لاکھ ڈالر کا ایک فلیٹ حاصل کیا، یہ جائیداد ان کی اہلیہ کے نام اکبر آصف کی آف شور کمپنی نے خریدی تھی جو مشہور فلم مغل اعظم کے ہدایت کار ’کے آصف‘ کے صاحبزادے ہیں۔ 

یہ بھی پڑھیے

Back to top button