بسم اللہ الرحمن الرحیم

کورونا وائرس

وفاقی دارالحکومت میں کووِڈ 19 کی صورتحال ہر بدلتے روز کے ساتھ سنگین ہونے لگی

وفاقی دارالحکومت میں کووِڈ 19 کی صورتحال ہر بدلتے روز کے ساتھ سنگین ہوتی جارہی ہے اور ہسپتال گنجائش ختم ہونے کے دہانے پر پہنچ چکے ہیں۔رپورٹ کے مطابق پاکستان انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (پمز) اپنی گنجائش پوری کرچکا ہے اور مریضوں کو ایمرجنسی سینٹر میں بھی بستر حاصل کرنے کے لیے انتظار کرنا پڑ رہا ہے۔

پمز جو ایک تربیتی نگہداشت کا ہسپتال ہے اور وہاں ملک بھر سے ہنگامی حالت میں مریض آتے ہیں اس نے ایسے مریضوں کو بستروں کی کمی کے باعث دوسرے ہسپتالوں میں بھیجنا شروع کردیا ہے۔اسی طرح پولی کلینک جو اسلام آباد کے سب سے بڑے ہسپتالوں میں سے ایک ہے وہاں ایک بھی وینٹیلیٹر خالی نہیں، انتظامیہ کے مطابق کووِڈ 19 مریضوں کے لیے مختص گنجائش میں اضافہ نہیں کیا جاسکتا کیوں کہ ہسپتال کے مخلتف شعبہ جات میں روزانہ تقریباً 7 ہزار مریض آتے ہیں۔

تاہم وزارت صحت نے دعویٰ کیا کہ وہ قریب سے اس صورتحال کا مشاہدہ کررہی ہے اور جب بھی مزید بستروں اور وینٹی لیٹرز کی ضرورت پڑی اس کا بندو بست کیا جائے گا۔خیال رہے کہ اسلام آباد کی مجموعی آبادی تقریباً 23 لاکھ نفوس پر مشتمل ہے جس کی لیبارٹری میں کورونا وائرس کا پہلا کیس گزشتہ برس 26 فروری کو رپورٹ ہوا تھا اور اب تک 57 ہزار سے زائد کیسز سامنے آچکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

Back to top button