بسم اللہ الرحمن الرحیم

تجارت

ملک میں بجلی 62 سے 68 پیسے فی یونٹ تک سستی ہونے کاامکان

مارچ میں فی یونٹ بجلی پر فیول لاگت کا تخمینہ 6 روپے 22 پیسے تھا، جبکہ لاگت فی یونٹ 5 روپے 61 پیسے رہی

مارچ کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے تحت ملک میں بجلی 62 سے 68 پیسے فی یونٹ تک سستی ہو سکتی ہے۔اسلام آباد میں چیئرمین نیپرا کی زیرِصدارت مارچ کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کیلئے سماعت ہوئی۔

سی پی پی اے نے مارچ کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے تحت بجلی سستی کرنے کی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ مارچ کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے تحت فی یونٹ بجلی 61 پیسے سستی کی جائے۔

سماعت کے دوران چیئرمین نیپرا کو بریفنگ دی گئی کہ مارچ میں 8 ارب 61 کروڑ یونٹ بجلی تقسیم کار کمپنیوں کو فراہم کی گئی، مارچ میں فی یونٹ بجلی پر فیول لاگت کا تخمینہ 6 روپے 22 پیسے تھا، جبکہ لاگت فی یونٹ 5 روپے 61 پیسے رہی۔

چیئرمین نیپرا نے سوال کیا کہ فرنس آئل کا استعمال کیوں کیا گیا؟ بجلی کی پیداوار میں گیس کا استعمال کیوں کم رہا؟

نیشنل پاور کنٹرول سینٹر نے جواب دیا کہ تیکنیکی مسائل درپیش تھے، پاور پلانٹس کو گیس کم ملی۔

چیئرمین نیپرا نے کہا ہے کہ سماعت کا فیصلہ بعد میں جاری کریں گے۔ذرائع نے امید ظاہر کی ہے کہ مارچ کی فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کے تحت بجلی 62 سے 68 پیسے فی یونٹ تک سستی ہو سکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

Back to top button