بسم اللہ الرحمن الرحیم

جموں و کشمیر

مقبوضہ کشمیر سے 100 نیم فوجی کمپنیوں کی واپسی کا فیصلہ

سرینگر (ساؤ تھ ایشین وائر)

بھارتی حکومت نے مقبوضہ جموں و کشمیر میں 100 نیم فوجی کمپنیوں کو واپس بلانے کا فیصلہ لیا ہے تاکہ کمپنیوں میں تعینات نفری کی تعداد کو کم کیا جائے۔

ذرائع نے ساوتھ ایشین وائر کو بتایا کہ مقبوضہ جموں وکشمیر میں نیم فوجی دستوں کی تعداد کم کرنے کا منصوبہ پہلے سے بنا تھا اور اس کو حتمی شکل دی گئی ہے۔

وزارت داخلہ نے یہ فیصلہ نئی دہلی میں سیکیورٹی کی جائزہ میٹینگ میں لیا اور رواں ہفتے میں اس پر عمل ہوگا۔

 گزشتہ برس پانچ اگست کو دفعہ 370 کی منسوخی سے قبل ماہ جولائی کے اواخر میں بھارتی حکومت نے جموں وکشمیر میں 38 ہزار اضافی نیم فوجی دستوں کو تعینات کیا تھا تاکہ جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے خلاف احتجاج کو روکا جاسکے۔

پانچ اگست کے بعد جموں و کشمیر میں تقریباً چار ماہ تک بندشیں عائد رہیں جس دوران زندگی مفلوج رہی۔ساوتھ ایشین وائر کے مطابق اضافی فوجی دستوں کو جموں و کشمیر کے اطراف و اکناف میں تعینات کیا گیا ۔تھا جبکہ پولیس تھانوں میں سی آر پی ایف کی نفری تعینات تھی جو آج بھی ان تھانوں میں موجود ہے۔

یہ بھی پڑھیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button