بسم اللہ الرحمن الرحیم

تجارت

یوٹیلٹی اسٹورز پر ڈھائی ارب کے رمضان پیکیج کا آغاز

وفاقی وزیر برائے صنعت و پیداوار حماد اظہر   نے کہا ہے کہ یوٹیلٹی اسٹورز پر ڈھائی ارب روپے کے رمضان ریلیف پیکیج کا آغاز کر دیا ،حکومت پاکستان نے یوٹیلٹی اسٹورکو 50 ارب دیئے،تخمینہ ہے رمضان میں 80 لاکھ سے ایک کروڑ گھرانے یوٹیلیٹی اسٹورز سے مستفید ہوں گے ۔  انہوں نے جی نائن مرکز اسلام آباد میں یوٹیلٹی اسٹور پر رمضان پیکج کی افتتاحی تقریب کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا  کہ حکومت پاکستان نے یوٹیلٹی اسٹورکو 50 ارب دیئے ہیں، پہلے 5 اشیا پرسبسڈی دی جا رہی تھی اور اب 19 اشیا پر ریلیف دیا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم بڑی تعداد میں یوٹیلٹی اسٹورز کو بڑھا رہے ہیں، موبائل یوٹیلٹی اسٹورزبھی قائم کر رہے ہیں، ڈھائی ارب روپے کے رمضان ریلیف پیکیج کا اعلان کر دیا   لیکن ریلیف پیکیج صرف رمضان تک محدود نہیں رہے گا۔

ان کا کہنا ہے کہ یوٹیلٹی اسٹورز ایک آٹو میٹک ڈیجیٹل ادارہ بننے جا رہا ہے اور اس ادارے میں بھی اصلاح کی ضرورت ہے۔ انہوں  نے کہا کہ تخمینہ ہے رمضان میں 80 لاکھ سے ایک کروڑ گھرانے یوٹیلیٹی اسٹورز سے مستفید ہوں گے جب کہ قیمتوں پر کنٹرول کرنے کا نظام موجود ہے، ذخیرہ اندوزوں کے خلاف نیا قانون لا رہے ہیں جس کے تحت ذخیرہ اندوزی پر دکان کے مالک کو سزا ملے گی۔

لاک ڈائون میں نرمی کے حوالے سے بات کرتے ہوئے حماد اظہر نے کہا کہ جو جو سیکٹرز کھولے جا رہے ہیں وہ باقاعدہ تحقیق کے ساتھ کھول رہے ہیں، ہم کوشش کر رہے ہیں کہ کاروباری طبقے کے حالات بھی بہتر کرسکیں۔

حماد اظہر نے کہا کہ کھانے پینے کی اشیا کی ترسیل پرکوئی پابندی نہیں ہے لیکن لاک ڈائون کے دوران ہمیں نظم و ضبط کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے۔

یہ بھی پڑھیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button