بسم اللہ الرحمن الرحیم

قومی

سندھ میں کورونا سے زیادہ لوگ بھوک سے مررہے ہیں، فیصل واوڈا

وفاقی وزیر تحریک انصاف کے رہنما فیصل واوڈا نے کہا ہے کہ سندھ میں کورونا وائرس کا پھیلاؤصوبائی حکومت کی نااہلی ہے۔ کورونا سے زیادہ لوگ بھوک سے مررہے ہیں۔ سندھ حکومت حقائق تسلیم کرے، عوام مزید لاک ڈاؤن کی متحمل نہیں ہوسکتی۔

سندھ حکومت احساس پروگرام کے 12 ہزار میں سے ایک ہزار روپے کھاگئی ہے۔

وفاقی وزیر فیصل واڈا نے  صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے میں کہا کہ بھوک سے پریشان لوگ مزید لاک ڈاؤن کے متحمل نہیں ہوسکتے ہیں۔ سندھ حکومت 70 لوگ سنبھال نہیں سکتی، 7 لاکھ کیسے سنبھالے گی۔

انہوں نے کہا کہ راشن مہم میں کرپشن عروج پر ہے۔ ٹھٹہ میں ایکسپائرڈ راشن دیا گیا ہے۔ اگر یہ سندھ حکومت نے ڈرامے بازی بند نہیں کی تو ہم جواب دیں گے۔

فیصل واوڈا نے مزید کہا کہ احساس پروگرام کے پیسوں میں بھی ڈنڈی ماری جارہی ہے۔ سندھ حکومت احساس پروگرام کے 12 ہزار میں سے ایک ہزار روپے کھاگئی ہے۔

فیصل واوڈا نے کہا کہ وزیراعلی سندھ ایئرکنڈیشنڈ روم میں بیٹھ کر باتیں کررہے ہیں، وہ صرف بیانات دے رہے ہیں، صرف بیانات سے کچھ نہیں ہوگا، سندھ حکومت کا کوئی وزیر اپنے حلقے میں نظر نہیں آتا، وزرا کو چاہیے سڑکوں پر نظر آئیں، 35 سال سے ووٹ لینے والے کہیں نظرنہیں آرہے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ ہم کورونا کو روکنے اور سندھ حکومت پھیلانے میں مصروف ہے۔ نااہلی کے باعث سندھ میں کورونا وائرس پھیل رہا ہے، راشن کیلئے سندھ کا ڈھائی ارب روپے کا بجٹ کہاں گیا؟ سندھ حکومت 70لوگ نہیں سنبھال سکتی،7لاکھ کیسے سنبھالیگی؟ عوام کو پیار سے سمجھانے پر سیکیورٹی اداروں کا مشکور ہوں۔

رہنما تحریک انصاف کا کہنا تھا کہ اندرون سندھ کی صورتحال انتہائی تکلیف دہ ہے، سندھ میں کہیں راشن چوری اور کہیں حکومتی رٹ نہیں، سندھ حکومت احساس پروگرام کے 12 ہزار میں سے ایک ہزار روپے کھا گئی۔ سندھ کے ساتھ نااہلی اور غنڈاگردی نہیں چلے گی، یہی صورتحال رہی تو ہم مجبور ہوجائیں گے، زیادتی نہیں ہونے دیں گے۔

یہ بھی پڑھیے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button