بسم اللہ الرحمن الرحیم

قومی

ٹیلی فون کالز ٹیپ کرنے کی اجازت دینے کا نوٹیفکیشن اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج

پاکستان بار نے حکومت کا انٹر سروس انٹیلیجنس (آئی ایس آئی) کو ٹیلی فون کالز ٹیپ کرنے کی اجازت دینے کے نوٹیفکیشن کو اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کردیا۔ پاکستان بار کونسل کے ممبران نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کردی۔

بار نے درخواست میں مؤقف اپنایا کہ وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی کی جانب سے 8 جولائی کو نوٹیفکیشن جاری کیا گیا، خفیہ ایجنسی کو یہ اجازت ٹیلی کمیونیکیشن ایکٹ کی دفعہ 54 کے تحت دی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ خفیہ ایجنسی کو فون کالز ٹیپ کرنے کی اجازت کا نوٹیفکیشن غیر قانونی ہے، ٹیلی کمیونیکیشن ایکٹ کی دفعہ 54 آئین کے آرٹیکل 9، 14 اور 19 کی خلاف ورزی ہے۔بار نے اپیل میں استدعا کی کہ عدالت حکومت کی جانب سے 8 جولائی کے نوٹیفکیشن کو آئین میں درج بنیادی انسانی حقوق کی شقوں سے متصادم قرار دے۔

مزید پڑھیے  سابق چیئرمین نیب نے پبلک اکائونٹس کمیٹی میں اپنی طلبی کو عدالت میں چیلنج کردیا
Back to top button