بسم اللہ الرحمن الرحیم

قومی

کوئی ایک جماعت مسائل حل نہیں کرسکتی، مریم، ہمیں مل کر یہ تقسیم ختم کرنا ہوگی،بلاول بھٹو

مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کی پنجاب اسمبلی میں پارلیمانی پارٹیوں کے اجلاس سے خطاب میں مریم نواز نے کہا کہ سنجیدہ نوعیت کی جماعتیں ملک کو آگے بڑھانا چاہتی ہیں، سنجیدہ جماعتوں کو پتا ہے عوام ان کی طرف دیکھ رہے ہیں اور احساس ہے کہ لڑائی جھگڑے آگے چلے تو غریب کو روٹی نہیں ملے گی۔انہوں نے کہا کہ ہم الیکشن میں مدمقابل تھے، الیکشن مہم میں ایک دوسرےکے خلاف تہذیب میں رہ کر باتیں کرتے ہیں، ملک گھمبیر مسائل میں گھرا ہوا ہے، سب کو مل کر بیٹھنا ہوگا، (ن) لیگ اور پیپلز پارٹی کا مشترکہ ایجنڈا ملک کو بحرانوں سے نکالنا ہے اور کوئی جماعت اکیلے مسائل حل نہیں کر سکتی۔ان کا کہنا تھا کہ صدر کسی ایک جماعت کا نہیں پورے ملک کا ہوتا ہے، بلاول بھٹو نہ بھی آتے تو پیپلز پارٹی کو ہی ووٹ دیتے، آپ اگر ووٹ مانگنے نہ بھی آتے پھر بھی (ن) لیگ ووٹ دیتی، میں سب کی وزیر اعلیٰ ہوں، محترمہ فاطمہ جناح اور بےنظیر ہماری رول ماڈل ہیں۔مریم نواز نے کہا کہ رمضان پیکج میں کسی سیاسی جماعت کی انٹری نہیں کی، رمضان پیکج کو میں ذاتی طور پر مانیٹر کر رہی ہوں، اب 5 سال جو آئین شکنی ہوئی اس سے سب کی جان چھوٹے گی، جبکہ ہم نے لوگوں کی دہلیز پر ان کا حق پہنچایا ہے۔انہوں نے کہا کہ پنجاب اسمبلی پر خواتین کا قبضہ ہے، اس تبدیلی کو ویلکم کرتے ہیں، میں آپ سب کی وزیر اعلیٰ ہوں، پیپلزپارٹی اور اتحادی جماعتوں کی خواتین کو کہتی ہوں سب کی چیف منسٹر ہوں، آپ سب اپنا کردار ادا کریں۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ وزیر اعلیٰ کا منصب سنبھالنے پر مریم نواز کو مبارکباد دیتا ہوں، مریم نواز پہلی خاتون وزیر اعلیٰ منتخب ہوئیں، انہیں رمضان پیکج کے اعلان پر بھی مبارکباد دیتا ہوں، رمضان پیکج سے پسماندہ اور غریب طبقے کو فائدہ ہوگا۔انہوں نے کہا کہ صدر زرداری تمام جماعتوں کے اراکین سے محبت سے ملتے ہیں، صدر کا عہدہ وفاق کی نمائندگی کرتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ایک مخصوص سیاسی جماعت نے تقسیم کی سوچ پیدا کردی ہے، ہمیں مل کر یہ تقسیم ختم کرنا ہوگی، سیاسی اختلافات پر ہم ایک دوسرے سے ہاتھ نہیں ملاتے، عوام چاہتے ہیں نفرت اور تقسیم کا ماحول ختم ہو، ہم مل کر آگے بڑھیں گے اور تمام مسائل کا خاتمہ کریں گے۔

Back to top button