بسم اللہ الرحمن الرحیم

قومی

ترکیہ اور آذربائیجان کے ساتھ تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں، وزیراعظم شہباز شریف

وزیراعظم شہبازشریف ترک صدر رجب طیب اردوان اور آذربائیجان کے صدر الہام علیوف کے ہمراہ سہ فریقی اجلاس میں شریک ہوئے۔اس موقع پر تینوں  ممالک کے درمیان باہمی دلچسپی کے مختلف امور پر تفصیلی گفتگو اور اجلاس میں علاقائی اور عالمی امن سے متعلق بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

وزیر اعظم نے اجلاس کو تینوں برادر مسلم ممالک کے درمیان سہ فریقی تعلقات کی پیشرفت قرار دیتے ہوئے کہا کہ ترکیہ اور آذربائیجان کے ساتھ تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔وزیراعظم نے اقتصادی، توانائی، سیاحت سمیت باہمی دلچسپی کے تمام شعبوں میں شراکت داری کی ضرورت پر زوردیا۔

وزیر اعظم نے اقتصادی اور سرمایہ کاری کے شعبوں میں سہ فریقی ادارہ جاتی مکینزم کے قیام کی بھی تجویز پیش کی جبکہ ثقافت، سیاحت سمیت سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبوں میں بھی تعاون پر زور دیا۔

اس سے قبل وزیراعظم شہباز شریف نے شنگھائی تعاون تنظیم کونسل آف ہیڈز آف اسٹیٹ کے اجلاس میں شرکت کے موقع پر قازقستان کے دارالحکومت آستانا میں روسی صدر پیوٹن سے بھی ملاقات کی تھی۔

ملاقات میں تجارت اورتوانائی سمیت مختلف شعبوں میں تعلقات مضبوط بنانے پر اتفاق کیا گیا۔اس موقع پر وزیراعظم شہبازشریف نے کہا کہ کوئی جغرافیائی سیاسی تبدیلی ہمارے تعلقات پر اثر انداز نہیں ہوسکتی، دونوں ممالک کے تعلقات مثبت سمت میں گامزن ہیں، ہمیں مستقبل میں اپنےتعلقات کو مزید وسعت دینا ہوگی، پاکستان اور روس عرصہ دراز سے دوست ممالک ہیں، ہمیں مستقبل میں تعلقات کو مزید مضبوط بنانا ہوگا۔

روسی صدر کا کہنا تھا کہ پاکستان اور روس کے درمیان بہترین تعلقات ہیں، تجارتی روابط کی بدولت دوطرفہ تعلقات میں مزید بہتری آئی ہے، توانائی اور زراعت کے شعبوں میں ہم اپنا تعاون بڑھاسکتے ہیں، غذائی تحفظ کے شعبے میں بھی پاکستان کے ساتھ تعاون بڑھائیں گے۔

مزید پڑھیے  سابق وزیر خزانہ کے حوالے سے سوشل میڈیا پر الزامات بے بنیاد پروپیگنڈا ہیں، آئی ایس پی آر
Back to top button