بسم اللہ الرحمن الرحیم

صحت

کشمش کھانے کے یہ فوائد جانتے ہیں؟

انگور خشک ہوکر کشمش کی شکل اختیار کرلیتے ہیں اور اس عمل کے دوران پھل میں پائے جانے والے غذائی اجزا اور مٹھاس کشمش میں اکٹھے ہوجاتے ہیں۔اسی وجہ سے کشمش کو غذائی اجزا اور کیلوریز سے بھرپور میوہ خیال کیا جاتا ہے۔

یہ میوہ ہر جگہ آسانی سے دستیاب ہوتا ہے اور چونکہ اس میں مٹھاس اور کیلوریز کی مقدار زیادہ ہوتی ہے تو معتدل مقدار میں اس کا استعمال کرنا ضروری ہوتا ہے۔کشمش میں پروٹین، فائبر، قدرتی شکر، کاربوہائیڈریٹس، آئرن، پوٹاشیم، کاپر، وٹامن بی 6 اور مینگنیز سمیت متعدد غذائی اجزا موجود ہوتے ہیں۔بیشتر افراد کشمش کو بھگو کر کھانا پسند کرتے ہیں مگر اس سے صحت کو فائدہ ہوتا ہے یا نہیں؟

جسمانی وزن میں کمی لانے میں مدد مل سکتی ہے

کشمش میں قدرتی شکر موجود ہوتی ہے جو چینی سے بنی اشیا کھانے کی خواہش کو کم کرتی ہے۔

پانی میں بھگو کر کشمش کے استعمال سے بلڈ شوگر کی سطح مستحکم ہوتی ہے اور اضافی کیلوریز جسم کا حصہ نہیں بنتی، جس سے جسمانی وزن میں کمی لانے میں مدد مل سکتی ہے۔

نظام ہاضمہ کے لیے مفید

کشمش میں فائبر کی مقدار کافی زیادہ ہوتی ہے اور خیال کیا جاتا ہے کہ پانی میں بھگو کر اسے کھانے بلکہ اس پانی کو پینے سے قبض سے نجات میں مدد ملتی ہے جبکہ نظام ہاضمہ کے افعال بہتر ہوتے ہیں۔

مدافعتی نظام مضبوط ہوتا ہے

کشمش میں وٹامن بی اور سی موجود ہوتے ہیں یہ وٹامنز مدافعتی نظام کو مضبوط بنانے میں کردار ادا کرتے ہیں۔

مزید پڑھیے  تمباکو پر زیادہ ٹیکس حکومت کے لیے ایک خوش آئند صورت حال ہے، ملک عمران

مدافعتی نظام مضبوط ہونے سے عام موسمی بیماریوں سے متاثر ہونے کا خطرہ کم ہوتا ہے۔

بینائی کے لیے بھی فائدہ مند

کشمش میں ایسے مرکبات موجود ہوتے ہیں جو عمر بڑھنے سے آنکھوں کے مسلز میں آنے والی تنزلی سے تحفظ فراہم کرتے ہیں۔

اس سے عمر بڑھنے کے ساتھ بینائی میں آنے والی کمزوری سے بچنا ممکن ہوتا ہے۔

ہڈیوں کو مضبوط بنائے

کشمش میں موجود اینٹی آکسائیڈنٹس کی ایک قسم phytonutrients سے ہڈیوں کی کمزوری سے ممکنہ تحفظ مل سکتا ہے۔

اس کے ساتھ ساتھ کشمش میں کیلشیئم بھی موجود ہوتا ہے جو ہڈیوں کی صحت کے لیے بہت اہم غذائی جز ہے۔

خون کی کمی دور کرے

کشمش میں آئرن کی مقدار کافی زیادہ ہوتی ہے۔

آئرن وہ منرل ہے جو خون کے سرخ خلیات کی نشوونما میں کردار ادا کرتا ہے اور آئرن کی کمی سے خون کی کمی کا خطرہ بڑھتا ہے۔

اسی طرح کشمش میں موجود کاپر بھی خون کے سرخ خلیات کے بننے کا عمل تیز کرتا ہے۔

بلڈ پریشر اور کولیسٹرول کی سطح کم کرے

تحقیقی رپورٹس سے ثابت ہوا ہے کہ کشمش کھانے سے بلڈ پریشر کی سطح کم ہوتی ہے جس سے امراض قلب کا خطرہ کم ہوتا ہے۔

اسی طرح کشمش پوٹاشیم کے حصول کا بھی بہترین ذریعہ ہے اور جسم میں اس غذائی جز کی کمی ہائی بلڈ پریشر، امراض قلب اور فالج کا خطرہ بڑھاتی ہے۔

کشمش میں موجود فائبر سے صحت کے لیے نقصان دہ کولیسٹرول کی سطح میں کمی آتی ہے جس سے بھی دل کی صحت کو فائدہ ہوتا ہے۔

مزید پڑھیے  کلیجی، دل و مغز کھانے سے صحت پرپڑنے والے اثرات
Back to top button