بسم اللہ الرحمن الرحیم

تجارت

دوطرفہ تجارت کو فروغ دینے کے لیے برطانوی تجارتی وفد کا پاکستان کا دورہ

برطانیہ کے 15 کاروباری نمائندوں کا ایک وفد ٹیکسٹائل، ایگری فوڈ، دستکاری اور گھر کی سجاوٹ کے شعبوں میں روابط استوار کرنے کے لیے پاکستان کا دورہ کر رہا ہے۔

برمنگھم، ویسٹ اور نارتھ یارکشائر چیمبرز آف کامرس اور ایشین چیمبر آف کامرس کے صدور کی قیادت میں وفد کراچی، لاہور اور سیالکوٹ میں چیمبرز آف کامرس کے اراکین سے ملاقات کرے گا۔

اس مشن کو انٹرنیشنل ٹریڈ سینٹر (ITC) نے منظم کیا ہے اور حکومت برطانیہ کی طرف سے فنڈ فراہم کیا گیا ہے۔ مندوبین “We Exhibit” تجارتی میلے میں بھی جائیں گے – سیالکوٹ میں خواتین کی زیرقیادت کاروباروں کی ایک تجارتی نمائش جس کی مالی اعانت برطانیہ کی حکومت نے کی ہے۔ وفد 3 مارچ تک پاکستان میں رہے گا۔

برطانوی ڈپٹی ہائی کمشنر اور ڈائریکٹر آف ٹریڈ پاکستان سارہ مونی نے کہا:

“برطانیہ اور پاکستان کے درمیان تجارت پہلے ہی متاثر کن شرح سے بڑھ رہی ہے۔ یہ وفد واضح طور پر اس کو بڑھانے میں دلچسپی ظاہر کرتا ہے، اور تجارت اور سرمایہ کاری میں اضافے کے لیے آنے والے مواقع کو ظاہر کرتا ہے۔ برطانیہ حکومت پاکستان کے ساتھ کام جاری رکھے گا، ایسی تبدیلیوں کی حمایت کرتا ہے جو تجارت کو ہر ایک کے لیے آسان اور آسان بناتی ہیں۔

مندوبین پاکستان کے کاروباری ماحول اور پاکستان سے درآمد کے لیے مخصوص مارکیٹ کی ضروریات کے بارے میں بصیرت حاصل کریں گے۔ یہ مشن برطانیہ کی کمپنیوں اور پاکستان میں ممکنہ سپلائرز کے درمیان براہ راست روابط قائم کرے گا، جس سے دونوں ممالک کے درمیان ممکنہ وسیع کاروباری روابط کے بارے میں آگاہی بڑھے گی۔

مزید پڑھیے  آئی ایم ایف اور پاکستان کے درمیان تکنیکی مذاکرات ختم، پیٹرول پر ٹیکس، اداروں کی نجکاری سمیت پاکستان کے سامنے نئے مطالبات

ITC برطانیہ کی مارکیٹ تک رسائی میں مدد کے لیے ایک برآمدی تیاری ہینڈ بک اور دو برآمدی گائیڈز بھی جاری کرے گا، جو انگریزی اور اردو دونوں زبانوں میں دستیاب ہے، تاکہ پاکستانی برآمد کنندگان کو برطانیہ کی مارکیٹ کے رہنما اصولوں کو سمجھنے میں مدد ملے۔

 

برطانیہ پاکستان کا تیسرا سب سے بڑا تجارتی شراکت دار ہے، جس کی کل تجارت £4.3 بلین ہے، اور براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری کا تیسرا سب سے بڑا ذریعہ ہے۔ UK’s Development Countries Trading Scheme نے پاکستانی برآمدات کے 94% کے لیے محصولات میں کمی اور تجارتی شرائط کو آسان بنا کر برطانیہ اور پاکستان کے درمیان تجارت کی نئی راہیں کھول دی ہیں۔

Back to top button