بسم اللہ الرحمن الرحیم

قومی

19 کروڑ پاؤنڈ سکینڈل، بشریٰ بی بی نیب تحقیقات کیلئے 7 جون کو طلب

قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے 19 کروڑ پاؤنڈ سکینڈل میں تحقیقات کے لیے قائم مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان کے بعد ان کی اہلیہ بشریٰ بی بی کو بھی 7 جون کو طلب کرلیا۔

نیب نے برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی (این سی اے) سے 19 کروڑ پاؤنڈ کی واپسی کے اسکینڈل کے معاملے میں عمران خان کی اہلیہ بشریٰ بی بی کو جے آئی ٹی میں طلب کرلیا ہے۔

بشریٰ بی بی کو بھیجے گئے نوٹس میں ہدایت کی گئی ہے کہ 7 جون کو صبح 11 بجے نیب راولپنڈی کے دفتر جی-6 اسلام آباد میں جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوں اور بھیجے گئے سوالات کے جواب تحریری شکل میں جمع کرادیں۔

نیب کی جانب سے نوٹس میں القادر یونیورسٹی پروجیکٹ ٹرسٹ، القادر یونیورسٹی پروجیکٹ انڈومنٹ فنڈ ٹرسٹ اور القادت ٹرسٹ کی رجسٹریشن سمیت دیگر تمام دستاویزات ساتھ رکھنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

خیال رہے کہ اسلام آباد کی احتساب عدالت میں القادر ٹرسٹ کیس کے سلسلے میں تفتیشی افسر نے عدالت کو آگاہ کیا تھا کہ کیس میں سابق خاتون اول بشریٰ بی بی کی گرفتاری درکار نہیں ہے جس کے بعد عدالت نے ان کی ضمانت کی درخواست غیر مؤثر قرار دے دی تھی۔

احتساب عدالت اسلام آباد کے جج محمد بشیر نے این سی اے تحقیقات، 19 کروڑ پاؤنڈز اسکینڈل کیس میں سابق وزیر اعظم عمران خان کی اہلیہ بشریٰ بی بی کی ضمانت کی درخواست پر سماعت کی۔

مزید پڑھیے  روس کے صدر پیوٹن کا وزیراعظم عمران خان کو ٹیلی فون، افغان صورتحال پر تبادلہ خیال

اس سے قبل نیب نے 19 کروڑ پاؤنڈ اسکینڈل کے تحت سابق وزیراعظم عمران خان کو بھی 7 جون کو طلب کر لیا ہے، جو اس مقدمے میں مرکزی ملزم ہیں۔

Back to top button