بسم اللہ الرحمن الرحیم

کھیل

کراٹے کلاس کا بچہ ٹرینر کے ہاتھوں موت کی وادی میں چلا گیا

واقعے کے 70 روز بعد بچے کے والدین نے معاملے پر خاموشی توڑتے ہوئے حقائق سے پردہ اٹھایا

تائیوان میں کراٹے کلاس کے دوران دو درجن سے زائد بار زمین پر پٹخے جانے سے 7 سالہ بچہ جان کی بازی ہار گیا۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق رواں برس اپریل میں ایک ٹرینر اور بچے کے ساتھی نے جوڈو کراٹے کی کلاس کے دوران 7 سالہ بچے پر پریکٹس کرتے ہوئے اسے تقریبا 27 بار زمین پر پٹخا جس سے اس کے دماغ پر شدید چوٹیں آئیں۔

بعد ازاں متاثرہ بچہ کوما میں چلا گیا اور پھر بچے کی زندگی کو بچانے کے لیے اسے اسپتال کے انتہائی نگہداشت کے وارڈ داخل کرنا پڑ گیا تاہم بچہ زخموں کی تاب نا لاتے ہوئے جان کی بازی ہار گیا۔

مقامی میڈیا کے مطابق واقعے کے 70 روز بعد بچے کے والدین نے معاملے پر خاموشی توڑتے ہوئے حقائق سے پردہ اٹھایا۔تائی پی ٹائمز کے مطابق 60 سالہ ٹرینر پر چھوٹے بچے کو جرم کے ارتکاب کے لیے استعمال کرنے اور بچے کو جسمانی تشدد کا نشانہ بنانے کے الزامات عائد کیے گئے تاہم بعد ازاں جوڈو کراٹے ٹرینر نے صرف 3583 امریکی ڈالر میں اپنی ضمانت کروا لی۔

یہ بھی پڑھیے

Back to top button