بسم اللہ الرحمن الرحیم

تجارت

آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن نے وفاقی بجٹ کو ظالمانہ قرار دیدیا

آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن (اپٹما) نے وفاقی بجٹ پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے اسے ظالمانہ قرار دیا ہے۔اپٹما کے اعلامیے کے مطابق ظالمانہ بجٹ سے ٹیکسٹائل سیکٹر تباہ ہو جائے گا، بجٹ کے بعد ملکی برآمدات میں بڑی کمی کا اندیشہ ہے جبکہ برآمدات کم ہونے سے سے ملک میں بے روزگاری میں اضافہ ہوگا، برآمدات میں کمی سے بیرونی سیکٹر کو مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

اپٹما کے مطابق بجٹ میں ملکی صنعتوں کو درپیش مسائل حل کرنے کا کوئی پلان نہیں، پاکستان میں ٹیکسٹائل انڈسٹری کے لیے بجلی کے نرخ ہمسایہ ممالک سے دوگنے ہیں۔اعلامیے میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ انڈسٹری پرکراس سبسڈی کا بوجھ 240 ارب روپے سے بڑھ کر 380 ارب روپے تک پہنچنے کا اندیشہ ہے۔اپٹما نے حکومت سے ٹیکسٹائل انڈسٹری کو بچانے کے لیے ہنگامی اقدامات کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید پڑھیے  پاکستان میں صنعتی سرگرمیوں میں بہتری کا آغاز ہو گیا مشنری کی درآمدات میں اضافہ
Back to top button