بسم اللہ الرحمن الرحیم

جموں و کشمیر

آزاد کشمیر حکومت کی ٹیکس چوری میں ملوث سگریٹ انڈسٹری کے خلاف کریک ڈاؤن میں تیزی

 آزاد کشمیر حکومت نے ٹیکس چوری۔یں ملوث سگریٹ فیکٹریوں کے خلاف کریک ڈاؤن میں تیزی لے آئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم آذاد کشمیر کے احکامات پر سگریٹ کی غیر قانونی صنعت اور ٹیکس چوری میں ملوث سگریٹ فیکٹریوں کے خلاف مختلف شہروں میں پولیس اور ایکسائز و ٹیکسیشن ڈیپارٹمنٹ کی مشترکہ ٹیموں نے آپریشن شروع کر دیا ہے۔ اس سلسلے میں میرپور، بھمبر،برنالہ میں ٹیکس چوری میں ملوث سگریٹ فیکٹریوں نیشنل ٹوبیکو کمپنی، والٹن ٹوبیکو اور چنار ٹوبیکو کمپنی کے گوداموں پر چھاپے مارے گئے۔ نیشنل ٹوبیکو کمپنی بھمبر کے گودام پر چھاپے کے دوران 3811 کارٹن غیر قانونی سگریٹ اور 3لاکھ 84ہزار کلو سے زائد خام تمباکو ضبط کر لیا گیا۔ جبکہ واالٹن ٹوبیکو فیکٹری برنالہ میں چھاپے کے دوران 10 کارٹن غیر قانونی سگریٹ، 10 کروڑ سگریٹ سٹکس کی تیاری کے لیے 10 تمباکو بیگ، 19 سگریٹ پیپر رول ضبط کر لیا گیا۔

 

اس کے علاؤہ چنار ٹوبیکو فیکٹری برنالہ میں چھاپے کے دوران 731 تمباکو بیگ ضبط کر لیے گئے ۔ اس کے علاؤہ ایک اور کاروای میں نیشنل ٹوبیکو کمپنی کے لیے کرایہ پر لیے گئے گھر ہر چھاپے کے دوران 85 کارٹن فلٹر راڈ، 67 کارٹن سگریٹ پیپر، 17 کارٹن غیر قانونی سگریٹ، 16 کارٹن سگریٹ ٹیپ، 10 ہزار کلو تمباکو سمیت بھاری مقدار میں خام مال ضبط کر لیا گیا۔حکومتی زرائع کے مطابق وزیر اعظم آزاد کشمیر کے احکامات پر پولیس اور ایکسائز و ٹیکسیشن ڈیپارٹمنٹ کی مشترکہ ٹیموں نے ان عناصرکے خلاف آپریشن شروع کیاہے۔ اس وقت سگریٹ انڈسٹری میں ٹیکس چوری کی وجہ سے آزاد کشمیر حکومت کو سالانہ اربوں روپے کا نقصان ہو رہا ہے۔ جبکہ آذاد کشمیر میں تیار کیے جانے والے غیر قانونی سگریٹوں کو پنجاب میں سمگل کیا جاتا ہے۔ اس کے علاؤہ آذاد کشمیر کی حدود میں قائم سگریٹ فیکٹریوں میں ابھی تک ٹریک ینڈ ٹریس سسٹم کو نافذ نہیں کیا جا سکا۔

Back to top button