بسم اللہ الرحمن الرحیم

قومی

حکومت جرائم چھپانے کیلئے چیف الیکشن کمشنر پر الزامات لگا رہی، احسن اقبال

مسلم لیگ نون کے رہنما و سابق وفاقی وزیر احسن اقبال کا کہنا ہے کہ حکومت پاکستان کے اداروں پرحملے کر رہی ہے، نون لیگ کے لیے دہرا معیار بند کیا جائے۔

اسلام آباد کی احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ نون کے رہنما و سابق وفاقی وزیر احسن اقبال نے کہا کہ 3200 ارب سے زائد فنڈز ریلیز کیئے، کرپشن ہوئی ہے تو ثبوت سامنے لائیں۔

انہوں نے کہا کہ عوام جان چکے ہیں کہ یہ لوگ حکومت نہیں چلا سکتے، ڈسکہ میں عوام کے ووٹوں پر ڈاکہ ڈالا گیا اس کی رپورٹ آنے والی ہے۔

احسن اقبال کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی کے خلاف فیصلہ آنے والا ہے اس لیے الیکشن کمیشن پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے، چیف الیکشن کمشنر کا نام حکومت نے تجویز کیا تھا، جس کو اپوزیشن نے قبول کیا۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی اپنے جرائم کو چھپانے کے لیے چیف الیکشن کمشنر پر الزامات لگا رہی ہے، حکومت کی ناکامی کی وجہ سے پاکستان کی بین الاقوامی سطح پر جگ ہنسائی ہو رہی ہے۔

سابق وفاقی وزیر نے کہا کہ کھیلوں کے میدان دوبارہ اجڑ رہے ہیں، سپریم کورٹ کے فیصلوں کی خلاف ورزیاں ہو رہی ہیں، اس لاڈلے اور تابعدار کا احتساب کریں گے۔

ان کا کہنا ہے کہ کل قومی اسمبلی میں بھی نارووال اسپورٹس سٹی کا مسئلہ اٹھایا، 90 فیصد پراجیکٹ مکمل تھا لیکن اس کو انتقام کا نشانہ بنایا گیا۔

احسن اقبال نے کہا کہ نارووال اسپورٹس سٹی مکمل ہو جاتا تو کھلاڑی ٹریننگ کر کے میڈل لاتے، وہاں کروڑوں روپے کا سامان ضائع کر دیا گیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت اپنی نااہلی چھپانے کے لیے اپوزیشن پر الزامات لگاتی ہے، سری لنکا، ویسٹ انڈیز، ورلڈ الیون اور زمبابوے کی ٹیمیں ہمارے دور میں پاکستان آئیں۔

نون لیگی رہنما کا یہ بھی کہنا ہے کہ حکومت کی ناکامی کی وجہ سے پاکستان کی بین الاقوامی سطح پر جگ ہنسائی ہو رہی ہے، انتخاباتی اصلاحات کا پیکیج دھاندلی کا پیکیج ہے۔

یہ بھی پڑھیے

Back to top button