بسم اللہ الرحمن الرحیم

قومی

اگر امن عمل تعطل کا شکار رہا تو افغانستان میں تشدد میں مزید اضافہ ہوسکتا،شاہ محمود قریشی

افغان امن عمل کا حصہ بنے رہنے میں طالبان کا قومی مفاد ہے

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہےکہ طالبان غیرملکی افواج کے انخلاء کے اپنے مقصد میں بڑی حد تک کامیاب ہوچکے ہیں۔

ابوظبی میں غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کو انٹرویو میں شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاکستان طالبان پرافغان امن عمل سے وابستہ رہنے پر زور دے رہا ہے، طالبان اپنے فیصلے خود کرتے ہیں لیکن پاکستان انہیں آمادہ کرنے کی ہرممکن کوشش کرے گا۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ افغان امن عمل کا حصہ بنے رہنے میں طالبان کا قومی مفاد ہے، افغانستان سےغیرملکی فوجیوں کاانخلا ہوگا جس کیلئے ایک تاریخ دی گئی ہے،غیرملکی فوجیوں کے انخلا کا عمل یکم مئی سے 11 ستمبر تک جاری رہےگا۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر امن عمل تعطل کا شکار رہا تو افغانستان میں تشدد میں مزید اضافہ ہوسکتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے افغانستان کے ساتھ اپنی ڈھائی ہزار کلو میٹر طویل سرحد پر 90 فیصد باڑ کا کام مکمل کرلیا،پاک افغان سرحد پرباڑ کا کام ستمبر تک مکمل ہوجائے گا۔

یہ بھی پڑھیے

Back to top button