بسم اللہ الرحمن الرحیم

قومی

پاکستان اور اٹلی کا انسانی اسمگلنگ سے نمٹنے کے لیے تعاون بڑھانے پر اتفاق

وفاقی وزیرداخلہ محسن نقوی سے اٹلی کی سفیر میریلینا ارملین کی وزارتِ داخلہ میں ملاقات۔ ملاقات میں دوطرفہ تعلقات کے فروغ اور اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔اس موقع پر وزیر داخلہ محسن نقوی نے کہا کہ پاکستان بھر میں انسانی سمگلنگ کے خلاف بھرپور کریک ڈاؤن جاری ہے، انسانی سمگلنگ کے مافیا کے خلاف زیرو ٹالرنس کی پالیسی اپنائی ہے۔ انہوں نے واضح کیا کہ غیر قانونی طور اٹلی پر جانے والوں کو ناصرف جیل جانا پڑے گا بلکہ رقم بھی ضائع ہو گی، انسانی سمگلنگ روکنے کے لئے ایف آئی اے کو بھرپور کارروائی کا حکم دیا جس پر کسی صورت کوئی سمجھوتہ نہیں ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان سے اٹلی قانونی طور پر ہنر مند افرادی قوت بھیجی جائے گی تاکہ ملک کی ترسیلات زر کا سبب بنے۔

ملاقات میں غیر قانونی طور پر اٹلی جانے والے پاکستانیوں کا داخلہ روکنے کے لئے معاہدے پر بھی اتفاق۔ غیر قانونی طور پر اٹلی جانے والے پاکستانیوں کا داخلہ روکنے اور باہمی تعاون کو فروغ دیا جائے گا۔ اس سلسلے میں مشترکہ پالیسی اپنانے پر اتفاق کیا گیا۔ پاکستان اور اٹلی کے درمیان انسانی سمگلنگ روکنے کے معاہدے کو جلد حتمی شکل دی جائے گی۔ معاہدے کو حتمی شکل دینے کے لیے وفاقی وزیرداخلہ محسن نقوی نے متعلقہ حکام کو موقع پر ہی احکامات جاری کیے۔ اس موقع پر میلان اور اسلام آباد کو سسٹر سیٹز کا درجہ دینے کی تجویز پر بھی غور کیا گیا۔

وفاقی وزیر داخلہ محسن نقوی نے پاکستان میں اٹلی کی سفیر کی ذمہ داری سنبھالنے پر میریلینا ارملین کو مبارکباد دی اور ان کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ اٹلی کی سفیر نے انسانی سمگلنگ کی روک تھام کے لیے وزیرداخلہ کے اقدامات کو سراہا اور انسانی سمگلنگ روکنے کے لئے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی۔وفاقی سیکرٹری داخلہ خرم علی آغا اور اٹلی کے سفارت خانے کے اعلی حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔

مزید پڑھیے  شہباز شریف کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سمری پیر یا منگل تک موصول ہوگی، شیخ رشید
Back to top button